307

پاکستانی معیشت زبوں حالی کا شکار شماریات بیوریو کے دل ھلا دینے والے انکشافات خطرے کی گھنٹی

پاکستان کا المیہ ھے یہاں کوئی کام سائینسی بنیادوں پر نھیں ھوتا ھر کام میں جھوٹ کا سہارا لیا جاتا ھے ھمیں شماریات سے کوئی دلچسپی نھیں کیاں غلطی ھے کیسے دور ھو گی
پاکستان کے محکمہ شماریات میں ممتاز اکانومسٹ ھیں ھم نے کبھی ان کی باتوں پر غور نھیں کیا
پاکستان مٰیں ڈالر کا بڑھتا ریٹ ایکسپورٹر کو ریبیٹ کی عدم ادائیگی بجلی کے اونچے ریٹ گیس کا نا ھونا یے مسائل ایسے ھیں جنہیں حل نا کیا تو ھم دیوالیہ ھو جائیں گے
پاکستان کو ایف اے ٹی ایف کی 27 میں سے 22 شرائط ابھی بھی پوری کرنی ھیں تیں ماہ میں یے کیسے ھو گا اس پر جنگی بنیادوں پر کام کرنا ظروری ھے
آئی ایم ایف کی سخت ترین شرائط سے ماحول پہلے ھی بگڑ چکا ھے آئےدن کی ھڑتالیں اور مسائل کا حل نا ھونا بہت خطرناک ھو گا
آئی ایم ایف کا 22 تاریخ کا پاکستان کا دورہ تعین کرے گا کے ھمیں کیا سہولت ملتی ھے
پاکستان اپنے بجٹ کا 23 فیصد فوج پر خرچ کرتا ھے اس کے بعد قرضوں کی واپسی سود یے تباھی ھے
پاکستان میں کاروبار کے لیے بینکوں سے قرضہ لینا پہلے ھی جان جوکھوں کا کام ھے اس کے بعد شرع سود دنیا بھر میں سب سے زیادہ ھے
ھمیں نرم شرائیط پر قرضوں کا حصول ممکن بنانا ھو گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں